Prime Minister Imran Khan will pay a two-day Official visit to Turkey from 3rd January (30.12.18) #PrimeMinisterImranKhan Prime Minister Imran Khan will pay a two-day official visit to Turkey on Thursday at the invitation of Turkish President Recep Tayyip Erdogan. This will be Prime Minister’s first official visit to Turkey. He will be accompanied by a high-level delegation including Foreign Minister Makhdoom Shah Mehmood Qureshi, Planning Minister Makhdoom Khusro Bakhtyar; and Adviser to the Prime Minister Abdul Razak Dawood. During the visit, the Prime Minister will meet the Turkish President and discuss the entire spectrum of bilateral relations between the two countries. Views pertaining to regional and international situation will also be exchanged. Imran Khan will also address a business forum, and hold several meetings with Turkish businessmen and potential investors during his stay at Ankara. Our Correspondent Muhammad Akram Khan adds that Pakistan and Turkey enjoy historic and unparalleled ties based on a common religious and cultural legacy that dates back to centuries. The two countries have excellent political, economic, defense, cultural and people-to-people relations that continue to grow from strength to strength each passing year. Prime Minister’s upcoming visit to Turkey will further reinforce the historic ties between the governments and the people of the two brotherly countries. The visit will also help to explore new vistas of cooperation between the two countries, particularly in the area of economic, trade and commercial relations. وزیراعظم عمران خان ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کی دعوت پر جمعرات سے ترکی کے دو روزہ سرکاری دورے پر روانہ ہونگے۔وزیراعظم کا ترکی کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہو گا۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی، منصوبہ بندی کے وزیرمخدوم خسرو بختیار اور وزیراعظم کے مشیر عبدلرزاق داؤد سمیت اعلیٰ سطح کا ایک وفد ان کے ہمراہ ہو گا۔دورے میں وزیراعظم ترک صدر سے ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں پر بات چیت کرینگے۔علاقائی اور بین الاقوامی صورتحال سے متعلق امور پر بھی تبادلہ خیال ہو گا۔عمران خان انقرہ میں اپنے قیام کے دوران کاروباری فورم سے بھی خطاب کرینگے اور ترک تاجروں اور سرمایہ کاروں سے ملاقاتیں کرینگے۔ریڈیو پاکستان کے نمائندے محمد اکرم خان نے بتایا کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان مشترکہ مذہبی اور ثقافتی اقدار پر مبنی تاریخی اور مثالی تعلقات ہیں جو کئی صدیوں پر محیط ہیں۔ دونوں ملکوں کے درمیان شاندار سیاسی، اقتصادی، دفاعی، ثقافتی تعلقات اور عوام کے درمیان روابط ہیںجو ہرگزرتے دن کے ساتھ مزید مستحکم ہونگے۔وزیراعظم کے ترکی کے اس دورے سے دونوں حکومتوں اور دونوں برادر ملکوں کے عوام کے درمیان تاریخی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔اس دورے سے دونوں ملکوں کے درمیان خصوصاً معاشی اور تجارتی شعبوں میں تعاون کے نئے مواقع تلاش کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

475

Prime Minister Imran Khan will pay a two-day Official visit to Turkey from 3rd January (30.12.18)
#PrimeMinisterImranKhan

Prime Minister Imran Khan will pay a two-day official visit to Turkey on Thursday at the invitation of Turkish President Recep Tayyip Erdogan.

This will be Prime Minister’s first official visit to Turkey. He will be accompanied by a high-level delegation including Foreign Minister Makhdoom Shah Mehmood Qureshi, Planning Minister Makhdoom Khusro Bakhtyar; and Adviser to the Prime Minister Abdul Razak Dawood. During the visit, the Prime Minister will meet the Turkish President and discuss the entire spectrum of bilateral relations between the two countries.

Views pertaining to regional and international situation will also be exchanged. Imran Khan will also address a business forum, and hold several meetings with Turkish businessmen and potential investors during his stay at Ankara. Our Correspondent Muhammad Akram Khan adds that Pakistan and Turkey enjoy historic and unparalleled ties based on a common religious and cultural legacy that dates back to centuries.

The two countries have excellent political, economic, defense, cultural and people-to-people relations that continue to grow from strength to strength each passing year. Prime Minister’s upcoming visit to Turkey will further reinforce the historic ties between the governments and the people of the two brotherly countries.

The visit will also help to explore new vistas of cooperation between the two countries, particularly in the area of economic, trade and commercial relations.

وزیراعظم عمران خان ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کی دعوت پر جمعرات سے ترکی کے دو روزہ سرکاری دورے پر روانہ ہونگے۔وزیراعظم کا ترکی کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہو گا۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی، منصوبہ بندی کے وزیرمخدوم خسرو بختیار اور وزیراعظم کے مشیر عبدلرزاق داؤد سمیت اعلیٰ سطح کا ایک وفد ان کے ہمراہ ہو گا۔دورے میں وزیراعظم ترک صدر سے ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں پر بات چیت کرینگے۔علاقائی اور بین الاقوامی صورتحال سے متعلق امور پر بھی تبادلہ خیال ہو گا۔عمران خان انقرہ میں اپنے قیام کے دوران کاروباری فورم سے بھی خطاب کرینگے اور ترک تاجروں اور سرمایہ کاروں سے ملاقاتیں کرینگے۔ریڈیو پاکستان کے نمائندے محمد اکرم خان نے بتایا کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان مشترکہ مذہبی اور ثقافتی اقدار پر مبنی تاریخی اور مثالی تعلقات ہیں جو کئی صدیوں پر محیط ہیں۔ دونوں ملکوں کے درمیان شاندار سیاسی، اقتصادی، دفاعی، ثقافتی تعلقات اور عوام کے درمیان روابط ہیںجو ہرگزرتے دن کے ساتھ مزید مستحکم ہونگے۔وزیراعظم کے ترکی کے اس دورے سے دونوں حکومتوں اور دونوں برادر ملکوں کے عوام کے درمیان تاریخی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔اس دورے سے دونوں ملکوں کے درمیان خصوصاً معاشی اور تجارتی شعبوں میں تعاون کے نئے مواقع تلاش کرنے میں بھی مدد ملے گی۔

Prime Minister Imran Khan will pay a two-day Official visit to Turkey from 3rd January (30.12.18)
#PrimeMinisterImranKhan

Prime Minister Imran Khan will pay a two-day official visit to Turkey on Thursday at the invitation of Turkish President Recep Tayyip Erdogan.

This will be Prime Minister’s first official visit to Turkey. He will be accompanied by a high-level delegation including Foreign Minister Makhdoom Shah Mehmood Qureshi, Planning Minister Makhdoom Khusro Bakhtyar; and Adviser to the Prime Minister Abdul Razak Dawood. During the visit, the Prime Minister will meet the Turkish President and discuss the entire spectrum of bilateral relations between the two countries.

Views pertaining to regional and international situation will also be exchanged. Imran Khan will also address a business forum, and hold several meetings with Turkish businessmen and potential investors during his stay at Ankara. Our Correspondent Muhammad Akram Khan adds that Pakistan and Turkey enjoy historic and unparalleled ties based on a common religious and cultural legacy that dates back to centuries.

The two countries have excellent political, economic, defense, cultural and people-to-people relations that continue to grow from strength to strength each passing year. Prime Minister’s upcoming visit to Turkey will further reinforce the historic ties between the governments and the people of the two brotherly countries.

The visit will also help to explore new vistas of cooperation between the two countries, particularly in the area of economic, trade and commercial relations.

وزیراعظم عمران خان ترکی کے صدر رجب طیب اردوان کی دعوت پر جمعرات سے ترکی کے دو روزہ سرکاری دورے پر روانہ ہونگے۔وزیراعظم کا ترکی کا یہ پہلا سرکاری دورہ ہو گا۔وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی، منصوبہ بندی کے وزیرمخدوم خسرو بختیار اور وزیراعظم کے مشیر عبدلرزاق داؤد سمیت اعلیٰ سطح کا ایک وفد ان کے ہمراہ ہو گا۔دورے میں وزیراعظم ترک صدر سے ملاقات میں دونوں ملکوں کے درمیان دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں پر بات چیت کرینگے۔علاقائی اور بین الاقوامی صورتحال سے متعلق امور پر بھی تبادلہ خیال ہو گا۔عمران خان انقرہ میں اپنے قیام کے دوران کاروباری فورم سے بھی خطاب کرینگے اور ترک تاجروں اور سرمایہ کاروں سے ملاقاتیں کرینگے۔ریڈیو پاکستان کے نمائندے محمد اکرم خان نے بتایا کہ پاکستان اور ترکی کے درمیان مشترکہ مذہبی اور ثقافتی اقدار پر مبنی تاریخی اور مثالی تعلقات ہیں جو کئی صدیوں پر محیط ہیں۔ دونوں ملکوں کے درمیان شاندار سیاسی، اقتصادی، دفاعی، ثقافتی تعلقات اور عوام کے درمیان روابط ہیںجو ہرگزرتے دن کے ساتھ مزید مستحکم ہونگے۔وزیراعظم کے ترکی کے اس دورے سے دونوں حکومتوں اور دونوں برادر ملکوں کے عوام کے درمیان تاریخی تعلقات کو مزید فروغ ملے گا۔اس دورے سے دونوں ملکوں کے درمیان خصوصاً معاشی اور تجارتی شعبوں میں تعاون کے نئے مواقع تلاش کرنے میں بھی مدد ملے گی۔