عقل کے ان اندھوں کو آج تک پتا ہی نہیں چلا کہ قوم کو کس چیز کی ضرورت تھی اور وہ اس کے گلے میں کیا ٹھونستے چلے آئے ہیں

1454

عقل کے ان اندھوں کو آج تک پتا ہی نہیں چلا کہ قوم کو کس چیز کی ضرورت تھی اور وہ اس کے گلے میں کیا ٹھونستے چلے آئے ہیں

عقل کے ان اندھوں کو آج تک پتا ہی نہیں چلا کہ قوم کو کس چیز کی ضرورت تھی اور وہ اس کے گلے میں کیا ٹھونستے چلے آئے ہیں؟ آفتاب اقبال